Urdu Novel Say Iqtibas - Mein Logon Ko

Urdu Iqtibas Facebook, Iqtabas From Urdu Novels, khoobsurat iqtibas, urdu adab iqtibas, best iqtibas fb, iqtibas from urdu novels, iktibas in urdu, khoobsurat iqtibas, lines from urdu novel,

میں نے لوگوں کو دوسروں کے پردے ہٹاتے دیکھا ہے کہ انہیں پھر اس سے کیا فائدہ حاصل ہوتا ہے؟
اور وہ کسی کا پردہ نہ رکھ کر صرف دنیا کا ہی فائدہ حاصل کر سکے ہیں،
وہ گھر بیٹھے ہی ذلیل ہوتے ہیں،

میں نے ایسا اپنی آنکھوں سے ہوتے دیکھا ہے۔

اور مجھے اس سے بھی کوئی تکلیف نہیں کہ انہوں نے مجھے کیا بولا اور کیا نہیں بولا، انکی نیکیاں میرے حصے آگئی ھوں گی،
اور میں چاہ رھی ھوں رونے لگوں ابھی اللہ کے سامنے،آھستہ آھستہ اپنے اندر سے بے جان ھوتی محسوس ھورھی ھوں،پھر بھی ھمت کر کے ڈھیٹ بنی بیٹھی ھوں، خود سے کہہ رھی ھوں تم اسی کی مستحق ھو، یہ تمہارے اپنے ھاتھوں کی کمائی ھے، لیکن پتا ھے کچھ دن پہلے ہی سنا تھا تفسیر میں،

عمر رضی اللہ عنہ کے پاس کسی شخص کو لایا گیا،چوری کی تھی اسنے، اس نے کہا پہلی بار چوری کی ھے،عمر رضی اللہ عنہ نے کہا نہیں تم جھوٹ بولتےھو، اللہ کبھی کسی کوپہلی بار بےپردہ نہیں کرتا،وہ موقع دیتا ھے،پھر اس شخص نےتسلیم کرلیا اور کہا کہ ھاں یہ تیسری بار چوری کی ھے،میری سمجھ میں آگیا تھا اللہ مجھے کیا سمجھانا چاھتےھیں،کہ جو مجھےگلہ ھواتھا کہ میراپردہ نہیں رکھااللہ نے،توپردہ تو رکھا تھا اللہ نے،لیکن یہ تو میں خود غلط ہوں۔اسی لیئے اللہ نے اب پردہ رکھناچھوڑ دیا، گناہ سے پلٹو گے نہیں تواللہ سےشکوےکیسے؟


عربی کی ٹیچر سے سنا تھا،
جو کسی اپنے مسلمان بھن، بھائی کے عیب کی پردہ پوشی کرتا ھے،بروز قیامت اللہ اسے بلائے گا اور کہے گا تو نے میرے فلاں بندے کے عیب کی پردہ پوشی کی،آج میں تیرا پردہ رکھتا ھوں،
تب سے میرے دل میں گھڑ ھی گئی یہ بات،

کیونکہ میری سوچ یہ ھے کہ کسی کا پردہ رکھنا ھے، میری نیت کسی کا پردہ رکھنے کی ھوتی ھے،
میں تب پھر اپنے دل کو اس بات سے ٹھنڈا کرتی تھی اور اللہ سے کہتی تھی میں نے پردہ رکھا ھے میرے مالک،آپ مجھے بلائیں گے ناں؟ مجھے کہیں گے ناں قیامت والے دن کے میں آج تیرا پردہ رکھتا ھوں، مجھے بس اتنا ھوتا تھا کہ اللہ مجھے جب بلائیں گے تو اسکا مطلب مجھ سے ملیں گے،مجھ سے بات کریں گے،

شیطان پوری کوشش کرتا کہ وہ مجھے غصہ دلائے،کہتا تم بھی بتا دو وہ فلاں بات،تم بھی کہہ دوں تمہاری بھلائی کیلئے بتا رھی ھوں،لیکن اس سب پر یہ احساس زیادہ حاوی تھا کہ ان سب نے بتا کر کیا حاصل کیا ھے؟
تم نہ بتاؤ گی تو ھاں اللہ سے ملاقات ضرور کرو گی،اللہ تمہیں بلا کر ضرور کہیں گے، تو تم کیا چاھتی ھو؟
اس وجہ سے میں خاموش ھوگئی تھی،

آج میرے پاس انکے لیئے بس دعا ہے کہ اللہ انہیں اس طرح کے کسی معاملے میں تکلیف نہ پہنچائے،
اللہ انکے دنیا میں اور آخرت میں پردے رکھ لے،
آمین ثم آمین

اقتباس
(زندگی کے تلخ تجربات)

جو پردے میں ہے اسے پردے میں ہی رہنے دیجیئے۔ کسی شخص کا دوسرا چہرا دیکھنے کی کوشش نا کیجیئے، بھلے آپ جانتے ہوں کہ وہ ایک خبیث باطن شخص ہے یا اس کا اصلی روپ کچھ اور ہے۔
آپ کے لیے یہی کافی ہے کہ وہ آپ کے سامنے اپنے خوبصورت باطن اور اچھی صورت کے ساتھ پیش آتا ہے۔ آپ کا کام چل رہا ہے تو بس اسی پر اکتفاء کیجیئےاوراسی میں خوش رہیئے۔
ہم میں ہرشخص کا ایک برا رُخ ہوا کرتا ہے جس سے کوئی دوسرا تو بعد کی بات، ہم خود اس رُخ سےنالاں اورشرمندہ رہتے ہیں۔لوگوں کےاسرارکوڈھونڈنےمیں لگ جانابد ظنی کےدروازےکھولتا ہے اورپھرخلق پرظلم ہوجانا کچھ بعید نہیں رہا کرتا

No comments