9 Best Life Quotes in Urdu | Aqwal E Zareen In Urdu

Feb 14, 2020


کچھ دنوں سے اس لڑکی کی ویڈیو بہت زیادہ وائرل ہو رہی ہے جو کسی بس میں بیٹھی ہوئی ہے اور پچھلے سیٹ پہ بیٹھے ایک سیاہ فام بچے کے ساتھ مسکراہٹوں بھری پیاری سی ویڈیو بنا رہی ہے۔ زوہیب بھائی کی نظر سے جب یہ ویڈیو گزری تو وہ لڑکی کے اس عمل سے شدید متاثر ہوئے اور اتفاقاً اگلے ہی دن انہیں کسی کام کے سلسلے میں شہر سے باہر جانا پڑ گیا......!!!!!

اب زوہیب بھائی سیٹ پر اکیلے بیٹھے تھے کہ اگلے سٹاپ پر ان کی سیٹ کے پیچھے ایک فیملی آ گئی جن کے ساتھ ایک گول مول سا پیارا بچہ بھی تھا.......!!!!
زوہیب بھائی نے جب اس بچے کو دیکھا تو انہیں وہ ویڈیو والی لڑکی یاد آ گئی تو زوہیب بھائی نے گاڑی چلنے کے ساتھ ہی موبائل نکال کر منہ پر قبض زدہ تاثرات بنا کر اس بچے کی ساتھ ویڈیو بنانا شروع کر دی.....!!!!
پہلے دس سیکنڈ تک تو بچہ غور سے زوہیب بھائی کو دیکھتا رہا ( شاید سوچ رہا ہوگا کہ جنگل کا یہ کھڑوس باندر یہاں کیا کر رہا ہے) پھر اگلے ہی لمحے اس بچے نے چیخیں مار کر زار و قطار رونا شروع کر دیا۔ ساتھ بیٹھی بچے کی ماں پریشان ہو گئی۔ بچے کو چپ کرانے کی بھرپور کوشش کی گئی مگر وہ مسلسل روئے جا رہا ہو۔ جب اس سے پوچھا کہ ہوا کیا ہے تو اس نے فوراً سے بھی پہلے زوہیب بھائی کی جانب اشارہ کیا تو تقریباً سارا ہی بس خونخوار نظروں سے زوہیب بھائی کو دیکھنے لگ گیا......!!!!

زوہیب بھائی نے ایک نظر سب کی جانب دیکھا
اور
بولا " ناں اکھیاں نال کھمدو کیا "
ترجمہ : " نہیں مجھے اب آنکھوں سے کھاؤ گے کیا "
اتنے میں وہ بچہ زور زور سے دوبارہ رونا شروع ہو گیا اور بار بار زوہیب بھائی کی جانب اشارے کرنے لگا......!!!
" قرآن دی قسم اے میں کجھ کینی کِیتا ، اے لوسی کُوڑ پِیا مریندے "
ترجمہ : " قرآن کی قسم میں نے کچھ نہیں کیا یہ لوسی جھوٹ ںول رہا ہے "
بس جی پھر کیا تھا ، بیچارے زوہیب بھائی کی ایک نہ سنی گئی اور انہیں بیچ راہ میں ہراسمنٹ کے کیس میں اپنے گند یعنی سامان سمیت اٹھا کر باہر پھینک دیا گیا........!!!
زوہیب بھائی بیچارے ڈیڑھ گھنٹہ تک سڑک پر عطاء اللہ عیسیٰ خیلوی کے گانے سنتے رہے اور اڈے کے قریب پہنچ کر مجھے کال کیا اور انتہائی مودبانہ انداز میں مجھے انتہائی غیر مؤدبانہ سی گالی دی اور کہا کہ یار مجھے اڈے سے پک کر لے........
اگلا پورا دن زوہیب بھائی نسوار اور سگریٹ ایک ساتھ پیتے رہے اور بالاخر میرے بے حد اصرار پر رات کو زوہیب بھائی نے تقریباً رونے والے انداز میں بتایا........!!!
" ووئے سلمان آ کِڈاہوں وی بالیں دے نال بال نہ بنڑی "
ترجمہ : " اوئے سلمان کبھی بھی بچوں کے ساتھ بچہ نہ بننا "
تحریر : سلمان حیدر خان








Post a Comment

© Urdu Thoughts.