Iqtibas From Urdu Novels | Urdu Iqtibas


Iqtibas From Urdu Novels | Urdu Iqtibas | Nemrah Ahmed Quotes About Life in Urdu



ﭘﮩﻠﯽ ﺑﺎﺭ ﺍﺳﮯ ﺍﺣﺴﺎﺱ ﮨﻮﺍ ﺗﮭﺎ ﮐﮧ ﻭﻩ ﮐﻢ ﮔﻮ، ﺳﻨﺠﯿﺪﻩ ﻃﺒﯿﻌﺖ ﮐﺎ، ﻟﯿﮯﺩﯾﮯ ﺭﮨﻨﮯ ﻭﺍﻻ ﺷﺨﺺ ﺿﺮﻭﺭ ﮨﮯ، ﻣﻐﺮﻭﺭ ﺑﮭﯽ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺟﻠﺪﯼ ﮔﮭﻠﺘﺎ ﻣﻠﺘﺎ ﺑﮭﯽ ﻧﮩﯿﮟ، ﻣﮕﺮ ﺍﻧﺪﺭ ﺳﮯ ﻭﮦ ﺑﮩﺖ ﺧﯿﺎﻝ ﺭﮐﮭﻨﮯ ﻭﺍﻻ ﺑﮭﯽ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺑﺎﺭﯾﮏ ﺑﯿﻦ ﺑﮭﯽ۔ ﺟﻮ ﻣﻌﻤﻮﻟﯽ ﺑﺎﺗﯿﮟ ﻭﮦ ﻧﻈﺮﺍﻧﺪﺍﺯ ﮐﺮ ﺩﯾﺘﯽ ﺗﮭﯽ، ﻭﮦ ﺟﮩﺎﻥ ﮐﯽ ﺯﯾﺮﮎ ﻧﮕﺎﮨﻮﮞ ﺳﮯ ﭼﮭﭙﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﺭﮨﺘﯽ ﺗﮭﯿﮟ۔

#JihanSikander
#JKP

***********************************


’’کوئی میری سوچیں پڑھ رہا ہے فرشتے!‘‘
’’وہ مخلوق نہیں ہے، وہ کلام ہے۔ بات ہے۔ اللہ کی بات۔ اور اللہ ہی تو سوچیں پڑھ سکتا ہے۔‘‘
وہ گم صم سی ہو گئی۔
’’میں...... میں اللہ تعالیٰ سے بات کر رہی تھی؟‘‘
’’تمہیں کوئی شک ہے؟‘‘
’’مگر...... یہ چودہ سو سال پرانی کتاب ہے، یہ کیسے ہو سکتا ہے کہ یہ پاسٹ (ماضی) میں ہو کر ہم سے چودہ سو سال بعد کے فیوچر (مستقبل) سے خود کو کنیکٹ کر لے؟ اِٹس لائک اے میریکل۔‘‘ (یہ تو معجزہ کی طرح ہے)
’’یہی تو ہم اسے کہتے ہیں۔ معجزہ!‘‘
’’اور جب یہ ختم ہو جائے گی؟‘‘
’’تو پھر سے شروع کر لینا۔ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کہا کرتے تھے، قرآن کے معجزے بار بار دہرانے سے کبھی پرانے نہیں ہوں گے۔ فہماً بتا رہی ہوں۔‘‘

#مصحف

***********************************


’’خوابوں کے لئے محنت کرنا پڑتی ہے۔ جان مارنی پڑتی ہے ۔ لوگ مسئلوں کا آسان حل مانگتے ہیں‘ اور جب وہ نہ ملے تو وہ مایوس ہو جاتے ہیں۔الله تعالیٰ کو وکٹم ہڈ بالکل نہیں پسند۔ ہمارے کچھ مسئلے ایسے ہوتے ہیں جن کو ٹھیک ہونے میں لمبا عرصہ لگنا ہوتا ہے ‘ تو منفی لوگوں کی طرح اس عرصے کومظلوم بن کے‘ اپنے دکھوں کی کہانیاں سنانے کے بجائے انسان کو آگے کے بارے میں اچھا سوچنا چاہیے۔اسے اتنا مثبت بننا چاہیے کہ اس سے مثبت شعائیں پھوٹنے لگیں۔ وہ جہاں جائے ‘ ان مثبت ‘ خوشگوار روشنیوں کو بکھیرتا جائے ۔‘‘

#Haalim_Novel

***********************************


’’آپ کو پتہ تھا، میں آپ کے بارے میں نہیں جانتی؟‘‘

’’ہاں، مجھ پتہ تھا۔ میں نے جب بھی تم سے ملنے کی کوشش کی، کریم تایا نے یہ ہی کہہ کر روک دیا کہ محمل ذہنی طور پہ ڈسٹرب ہو جائے گی، اور ابا سے نفرت کرے گی۔ پھر میں نے صبر کر لیا۔ میں جانتی تھی جو رب، بن یامین کو یوسف علیہ السلام کے پاس لا سکتا ہے، وہ محمل کو بھی میرے پاس لے آئے گا۔‘‘ وہ ہلکا سا مسکرائی تھی۔ محمل کو لگا، اس کی سنہری آنکھیں بھیگنے لگی تھیں۔

#مصحف

***********************************


''چیزیں وقتی ہوتی ہیں، ٹوٹ جاتی ہیں، بکھر جاتی ہیں۔ رویے دائمی ہوتے ہیں۔ صدیوں کے لیے اپنا اثر چھوڑ جاتے ہیں۔ انسان کو کوئی چیز نہیں ہرا سکتی جب تک کہ وہ خود ہار نہ مان لے۔''

#JannatKayPattay

***********************************


’’ میں نے ایک دفعہ ایک نظم پڑھی تھی جس نے مجھے یہ بتایا تھا کہ اگرانسان درخت جیسا ہے تو اس کے کچھ دوست پتوں جیسے ہوتے ہیں۔ بظاہر خوشنما لگنے والے یہ پتے اپنی خوراک اسی درخت سے چوس رہے ہوتے ہیں اور جیسے ہی سخت موسم آتا ہے ‘ وہ سب سے پہلے جھڑ جاتے ہیں۔
کچھ دوست شاخوں کی طرح ہوتے ہیں۔ وہ یہ دعویٰ کرتے ہیں کہ وہ تمہارے ساتھ رہیں گے اور تم سے ....یعنی درخت سے ....ساری توانائی اور خوراک لے کر جب یہ پھیلنے لگتے ہیں تو سمجھتے ہیں کہ یہ درخت کا قد اور شان بڑھا رہے ہیں حالانکہ یہ صرف خود کو بڑھا رہے ہوتے ہیں۔ یہ موسم کی سختی برداشت کر لیتے ہیں مگر کوئی دوسرا آ کے ان پہ دباؤ ڈالے تو اس کا وزن نہیں سہہ سکتے اور ٹوٹ کے گر جاتے ہیں۔ ایسی کمزور شاخیں بھی ان خوشنما پتوں کی طرح بے کار ہوتی ہیں۔ تمہیں ان دونوں کی ضرورت نہیں ہے ۔‘‘
’’اور تیسری قسم کے دوست ؟‘‘
’’وہ جڑوں کی طرح ہوتے ہیں۔ وہ تمہارے قدم مضبوط کرتے ہیں۔ موسم کی تبدیلی یا لوگوں کی باتیں‘ کوئی بھی ان پہ اثر نہیں کرتی ۔ وہ تمہیں تمہاری زمین سے جوڑے رکھتے ہیں۔ان کو کوئی نمودو نمائش یا تعریف نہیں چاہیے ہوتی ۔ وہ تم سے کوئی فائدے نہیں لیتے ۔ وہ بس تمہیں گرنے سے بچانے کے لئے وہاں موجود ہوتے ہیں۔ تمہیں‘ تالیہ ‘ یہ ڈیسائڈ کرنا ہے کہ تمہارے کون سے دوست پتے ہیں‘ کون شاخ اور کون تمہاری جڑ ہے۔‘‘

#Haalim_Novel


***********************************

''انسان بہت پیچیدہ مشین ہے۔ جتنا انسان خود اپنے آپ کو جانتا ہے، اتنا کوئی دوسرا انسان اسے نہیں جان سکتا۔''

#Paaras



ہم زمانہ جاہلیت سے دور اسلام میں آکر ایک ہی دفعہ توبہ کرتے ہیں، ساری عمر پھر عمل صالح تو کرتے ہیں مگر بار بار کی توبہ بھول جاتے ہیں۔ ہم ایک کھائی سے بچ کر سمجھتے ہیں زندگی میں پھر کبھی کھائی نہیں آئے گی اور اگر آئی تو بھی ہم بچ جائیں گے- ہم ہمیشہ نعمتوں کو اپنی نیکیوں کا انعام سمجھتے ہیں اور مصیبتوں کو گناہوں کی سزا۔۔۔۔۔۔ اس دنیا میں جزا بہت کم ملتی ہے اور اس میں بھی امتحان ہوتا ہے، نعمت شکر کا امتحان ہوتی ہے اور مصیبت صبر کا۔

#مصحف

***********************************


’اگر تم مجھ سے پوچھو تو میرا دل چاہتا ہے کہ ہر اس شخص کو روکوں جو اپنے کسی خونی رشتے دار سے ناراض ہے اور کہوں کہ اس کو کال کرلو‘ اس سے تعلق جوڑلو‘ چاہے اس نے آپ کا کتنا بھی دل کیوں نہ دکھایا ہو۔ میری طرح اتنے سال ضائع نہ کروبے کار کی انا میں۔ اگر تعلق نہیں جوڑو گے تو پتہ ہے کیا ہو گا؟ آپ کے بچوں میں انہی بہن بھائیوں کی شکلیں اور عادتیں نظر آنے لگیں گی جن سے آپ بہت دکھی دل کے ساتھ علیحدہ ہوئے تھے۔ اﷲ تعالیٰ کیوں بناتا ہے آپ کی اولاد میں آپ کے رشتوں کی مشابہت؟ اس لئے تاکہ ہم ان کو نہ بھول سکیں ۔ کیونکہ اگر ہم نے جلد صلح نہ کی تو وہ مر جائیں گے‘ کھو جائیں گے‘ یا ہم مر جائیں گے۔ کھو جائیں گے۔ میں نے غلطی کی تھی اور مجھے اس کے لئے ہمیشہ افسوس رہے گا۔ مگر تم میری غلطی کیوں دہرا رہی ہو؟‘‘

#Namal_Novel


***********************************


بعض لوگ مسکرانا بالکل بھول جاتے ہیں، یہاں تک کہ ان کے ہونٹوں کے گرد لاف لائنز بھی غائب ہو جاتی ہیں۔ پھر اگر کبھی وہ ذرا بھی مسکرا دیں تو لگتا ہے ان کی گردن پہ کوئی اجنبی چہرہ آ ٹھہرا ہے۔ ایسا اجنبی جس سے آپ شناسا بھی ہوں اور وہ آپ کو اچھا بھی لگے۔

#Paaras

No comments